Hide Button

سیمی ٹِپٹ منشٹریز مندرجہ ذیل زبانوں میں مواد مہیا کرتی ہے:۔

English  |  中文  |  فارسی(Farsi)  |  हिन्दी(Hindi)

Português  |  ਪੰਜਾਬੀ(Punjabi)  |  Român

Русский  |  Español  |  தமிழ்(Tamil)  |  اردو(Urdu)

news

پنجاب ہِندوستان میں فصل

فصل کا وقت ہندوستان کے ایک بہت بڑے روشنیوں کے تہوارکے چُھٹی کے دِن آیا۔تاہم روحانی فصل میں جوہِندوستان کی ریاست پنجاب میں ہوئی یہ تہوار کسی طرح بھی آڑے نہیں آیا۔ہزاروں کی تعداد میں پنجابی اِس امریکی مبشَر سیمی ٹِپٹ کو سُننے کیلئے آئے جو یسوع کی خوشخبری سُنا رہا تھا اور ہر شام کو سینکڑوں کی تعداد میں لوگوں نے رَدِ عمل کا اِظہار کیا۔ ٹپٹ نے ہر روزشام کو نہایت ہی سادہ مگر بڑا قُدرت والا پیغام سُنایا۔اُنہوں نے لوگوں کو بتایا کہ ‘‘خُدا آپ سے پیار کرتا ہے اور آپ اور آپ کے خاندان کیلئے اُس کا خاص منصوبہ ہے۔لیکن ہم میں ایک بہت بڑا مسئلہ ہے اور وُہ ہے گُناہ۔خُدا پاک ہے اور ہمارے گناہ ہمیں اُس سے دُور کرتے ہیں۔اِسی سبب سے یسوع اِس دُنیا میں آیا تاکہ ہماری سزا خوداَپنے اُوپر لے لے’’۔

God works in Indiaجب خُدا کا خادِم کلام سُنا رہا تھا تو لوگ بڑی خاموشی سے بیٹھے سُن رہے تھے ۔لگتا تھا کہ خُدا کے رُوح نے اُنہیں باندھا ہوا ہے۔خواتین و حضرات اسٹیج کی دُونوں طرف اَپنے لیئے اُمید، اِیمان اور محبَت کا کلام مانگ رہے تھے۔ فرسٹ بیپٹسٹ چرچ چندریگر کے پاسٹر نزیرمسیح نے کہا‘‘لوگ واقعی بھوکے ہیں۔ وُہ کُشادہ دِل لے کر آئے ہیں اور خُدا اُن کے دِلوں کو اَپنے فضل اور محبت سے بھر رہا ہے’’۔

آخری شام کوبڑے خیمہ سے بھی باہرلوگ موجود تھے۔کئی لوگ ڈیڈھ ڈیڈھ گھنٹے گاڑی کا سفر کر کے وہاں پہنچے۔ کُچھ اور لوگ قریبی گائوں سے بھی آئے تھے۔شہری اور سیاسی رہنما بھی ٹپٹ کو خوش آمدید کہنے کیلئے وہاں موجود تھے۔ہزاروں کی تعداد میں لوگوں نے اَپنے دِل خُدا وند کو دیئے۔ ایک تنظیم کے رَہنما پاسبان نے کہا‘‘یہاں پر ایک بیداری کی رُوح ہے۔خُدا یہاں پر عظیم کام کر رہا ہے۔خُدا نے ہمیں رُوحوں کی بہت بڑی فصل دی ہے’’۔

پنجاب میں پاسبانوں کی تربیت

سیمی ٹپٹ نے نہ صرف پنجاب ہندوستان میں بشارتی عبادات کیں بلکہ اُنہوں نے ایک پاسبانوں کی کانفرنس بھی کی۔رہنما امرتسر اور گردو نواع کے گائوں اور شہروں سے بھی آئے جو دو ملین کے قریب تھے۔یہ مقام سکھ ازم کا مرکز ہے۔ بہت سے سِکھوں نے مسیح کو قبول کیا اور وُہ اَب اپَنے لوگوں کو مسیح کے بارے میں تعلیم دے رہے ہیں۔ اِتوار صبح کو ٹپٹ نے فرسٹ بیپٹسٹ چرچ میں کلام سُنایا جس کے قریباً تمام ممبران سکھ پسِ منظر سے ہیں۔

پاسبانوں اور رہنماہانِ کلیسیا نے بتایا کہ خُدا نے اُن کی زِندگی میں کیسا بڑا کام کیا ہے۔ایک پاسبان نےکہا ‘‘میں بہت سی مُشکلات سے دوچار رہا لیکن خُدا نے مُجھے بتا یا کہ ضرور ہے کہ میں اُس کی طرف سے جواب کا اِنتظار کروں۔وُہ میری قُوَت کو بحال کرے گا’’۔ایک اور نے کہا‘‘مُجھے روزانہ جا کر اُس پانی سے پینے کی ضرورت ہے جو خُدا کے تخت سے بہتاہے’’۔ایک آدمی ایک پاسبان کے ساتھ آیا اور عبادت کے اختتام پر کھڑا ہوا اور کہا کہ مُجھے یسوع کی ضرورت ہے۔ٹِپٹ نے اِس آدمی کی رہنمائی کی اور اُس نے یسوع کو قبول کیا۔پاسبان قوَت و اُمید سے تازہ دَم ہو گئے تھے۔ٹپٹ نے رہنمائوں کو ‘‘ دوڑ میں بیدار رہنے’’ کی ضرورت پر تعلیم دی۔ اُن میں سے بہت سے رَہنمائوں نے یہ کہا اِن پیغامات نے ہماری مدد کی کہ

مزید تصاویر کیلئے یہاں کلِک کریں