Hide Button

سیمی ٹِپٹ منشٹریز مندرجہ ذیل زبانوں میں مواد مہیا کرتی ہے:۔

English  |  中文  |  فارسی(Farsi)  |  हिन्दी(Hindi)

Português  |  ਪੰਜਾਬੀ(Punjabi)  |  Român

Русский  |  Español  |  தமிழ்(Tamil)  |  اردو(Urdu)

news

ہندوستانی پاسبان دوڑ کیلئے بیدار ہو گئے

حال ہی میں سیمی ٹپٹ نے ہندوستان کی ایک ریاست تامل ناڈو میں پاسبانوں کی دو کانفرنسز کیں۔ تقریباً دو ہزار پاسبانوں نے اِن دو کانفرنسز میں شرکت کی اور خُدا نے جس دوڑنے کے دوڑنے کیلئے اُنہیں کہا اُنہوں نے اُس میں دوڑنے کیلئے قوت پائی۔پہلی کانفرنس مادھوری میں ہوئی جس میں پانچ سو پاسبانوں و رہنمائوں نے شرکت کی جبکہ دُوسری کانفرنس چنائی میں ہوئی جہاں تیرہ سو رہنمائوں نے شراکت کی۔

Sammy preachesپاسبانوں نے اِس دوڑ سے متعلق ٹپٹ کا پیغام بڑی توجہ سے سُنا۔ مترجمین میں سے ایک نے کہا‘‘میں بمشکل ترجمہ کر سکتاہوں۔میری خدمت میں کُچھ مشکلات تھیں اور یہ پیغام خاص طور پر میرے لیئے تھا’’۔ایک اور پاسبان نے کہا کہ‘‘اِس پیغام کی یہاں ضرورت تھی’’۔

پروگرام میں ایسی رُوح دیکھنے میں آئی کہ سامعین کے سخت دِل ٹوٹ گئے۔ پاسبانوں نے دُعا میں وقت گُزارا اور خُدا سے درخواست کی کہ‘‘ ہمیں بیدار فرما اور ہمیں زِندگی کی کٹھن چوٹیوں پر چڑھنے کیلئے توانائی عنایت فرما’’۔ایک ہندوستانی پاسبان ڈاکٹر ڈی ایس سپرجن نے بھی پاسبانوں سے خطاب کیا۔ اُنہوں نے پاسبانوں کو حوصلہ دیا کہ خُدا کی طرف سے جو آپ کی بلاہٹ ہو ئی ہے اُس میں وفادار رہیں۔

Prayingٹپٹ نے کہا کہ‘‘ خُدا تامل ناڈو میں بیداری بھیجنا چاہتا ہے۔یہ وُہ مقام ہے جہاں سے ہندوستان میں مسیحیت کا آغاز ہوا۔ توما رسول سب سے پہلے یہاں ہی خوشخبری لایا۔میری دُعا ہے کہ خُدا اِسی پُشت میں اَپنے لوگوں کو بیدار فرمائے’’۔

جب ٹپٹ نے اپیل کی کہ‘‘ خُداوند کا انتظار کریں’’ کہ وُہ آپ کی تونائی کو بحال فرمائے تو سینکڑوں پاسبانوں نے ردِ عمل کا اظہار کیا۔ بے شمار پاسبان خُدا کے حضور پکار رہے تھے کہ ہماری زِندگی میں روح القدس اَپنا گہرا کام فرمائے۔ ٹپٹ نے کہا’’میں سمجھتا ہوں کہ ہندوستان ماضیِ رفتہ میں آنے والی بیداریوں میں سے ایک کا تجربہ کر سکتاہے۔ لوگ روحانی بھوکے ہیں۔ یہ ملک دُنیا میں مالی، اقتصادی اور جمہوریت کے اعتبار سے ایک بہت بڑی طاقت بن رہا ہے۔ اس ملک میں اِن خصوصیات کے پیچھے جو قوت ہے وُہ روح القدس کی آندھی کا براہِ راست وسیلہ ہے۔