Hide Button

سیمی ٹِپٹ منشٹریز مندرجہ ذیل زبانوں میں مواد مہیا کرتی ہے:۔

English  |  中文  |  فارسی(Farsi)  |  हिन्दी(Hindi)

Português  |  ਪੰਜਾਬੀ(Punjabi)  |  Român

Русский  |  Español  |  தமிழ்(Tamil)  |  اردو(Urdu)

devotions
دُعا کے ذریعے ایک بے ایمان نسل میں کام ہوتا ہے

میں آج(اتوارکو) سکاٹ لینڈ کیلئے سفر کر رہا ہوںجہاں پر میں بیداری کی ضرورت سے متعلق ایک کانفرنس میں وعظ کروںگا۔ہفتے کے آخر پر میں ایتھوپیا جاﺅں گا جہاں میں سوڈان کے نزدیک ایک شہر میں بشارتی میٹنگ میں کلام سُناﺅں گا۔ایتھوپیا میں جانے کی وجہ وہ ہے جو وہاں پرایک سال پہلے ہوا۔خدا نے بڑے عجیب طریقے سے کام کیا۔جو مجھے تجربہ ہوا اُس کی وجہ سے میں خوشی سے بھر گیا۔

ایتھوپیا ۱۹، سال تک اشتراکیت کے تسلط میں رہا۔جب ملک کے ایماندا روں کیلئے عبادت کرنے کی آزادی ہوئی تو بشارتی مسیحیوںنے اپنے آپ کو دھڑے بندی کا شکار پایا۔اس کے نتیجے میں۲۶ سال سے بھی زائد عرصے سے ادید ابابا میں کوئی بھی بشارتی میٹنگ نہیں ہو رہی تھی۔روانڈا سے ایک پاسبان بنام جوزف ایتھوپیا میں گئے تاکہ ہماری خدمت کو متعارف کروا سکیں۔اُن کو دُعا کے جوابات کے مِلنے کا کافی تجربہ تھا۔اُنہوںنے دیکھا کہ ایسے ممالک جہاں انجیل کا لے جانا مشکل ہے جیسا کہ روانڈا اور برُنڈی وہاں بھی خدا نے اُن کی دُعا کے جواب میں دروازے کھولے۔وہ جانتے تھے کہ خدا کیلئے کوئی بھی کام مشکل نہیں ہے۔

ایتھوپیا میں آ کر بشارتی میٹنگ میں کلام سُنانے سے متعلق رہنماﺅں سے بات کرنے کے بعد پاسبانوں اور قائدین نے متفق ہو کر دُعاکی کہ یہ خدا کی مرضی تھی کہ ایک بشارتی کروسیڈ کیا جائے۔اسی لئے میں اس ملک میں گیا اور خدا کے روح کو کثرت سے کام کرتے ہوئے دیکھا۔خدا کے روح کے بہاﺅ کیلئے ایماندار بھوکے تھے۔اُنہوں نے دُعا کی اور خدا کے ہاتھ کو کثرت سے کام کرتے ہوئے دیکھا۔چار دنوں میں تین لاکھ سے زائد لوگوں نے اس عبادتی پروگرام میں شرکت کی اور ہزاروں کی تعداد میں لوگ مسیح کے پاس آئے۔

ان عبادات میں کچھ ہواجو اس بات کی تصدیق کرتا ہے کہ خدا نے کیوں اتنے بڑے عجیب طریقے سے کام کیا۔میں فٹ بال گراﺅنڈ میں سٹیج پر تھا کہ میں نے دیکھا کہ اسٹیڈیم کے پیچھے والے حصے میں تقریباً دو سو آدمی بیٹھے ہوئے تھے۔پینتالیس منٹ کے بعد یہ دو سو آدمی چلے گئے اور مزید دو سو آدمی آ گئے۔پھر پینتالیس منٹ بعدیہ دو سو آدمی چلے گئے اور مزید دو سو آدمی آ گئے۔ہر شام کو چار بار ایسا ہوتا تھا۔عبادت کے اختتام پر میں نے پاسبانوں میں سے ایک سے پوچھا کہ ہر پینتالیس منٹ کے بعد جانے اور آنے والے لوگ کون ہیں۔اُس نے بتایا«یہ دُعا گو لوگ ہیں۔سٹیڈیم کے نیچے بھی ایک ایسا مقام ہے جہاں دو سو لوگ سما سکتے ہیں۔اُس جگہ پر دو سو لوگ دُعاکر رہے ہیں۔اور ہر پینتالیس منٹ کے بعد دو سو لوگ اور آ جاتے ہیں اور اُن کی جگہ لے لیتے ہیں»۔جو کُچھ میں نے سُنا اُس کی وجہ سے انتہائی خوش ہوا۔اس کا مطلب یہ ہے کہ جب بھی میں اُس اسٹیڈیم میں کلام سُنانے کیلئے جاتا تو ۸۰۰ ،لوگ اُس وقت دُعا میں ہوتے۔اس میں حیرانگی کی کوئی بات نہیں ہے کہ خدا اس طرح زبردست طریقے سے کیوں کام کر رہا تھا۔

خدا دِل سے چاہتا ہے کہ بشارتی کام ہو۔بائبل مقدّس واضح طور پر بتاتی ہے کہ خدا اس کھوئی ہوئی اور مرنے والی دُنیا سے پیار کرتا ہے۔دُنیا خدا کے دِل پر ہے اور اسی طرح خدا کے لوگوں کے دِلوں پر بھی یہ دُنیا ہونی چاہیئے۔جب ایسا ہو گا تو ہم اُن لوگوں کیلئے آنسو بہانا شِروع کر دیں گے جنہوں نے نجات دہندہ کو کبھی بھی نہیں جانا۔بشارتی کام کیلئے دُعا بھید ہے۔دُعا خدا کیساتھ دوستانہ ہے اور جب ہماری اُس کیساتھ دوستی ہے تو پھر ہم چاہیں گے کہ اس دھرتی کے باسیوں کی زندگی میںبھی خدا کی بادشاہی آئے۔

ایسے لوگ جو منکسر المزاج اور مقدّس ہیں وہ ہمیشہ سے خدا کا بشارتی طریقہ رہے ہیں۔خدا آج بھی ایسے لوگوں کو ڈھونڈتا ہے کیونکہ دُعا کے ذریعے بے ایمان لوگوں کے دِل تیار ہوتے ہیں۔یسوع نے فرمایا«....میرے پاس کوئی نہیں آ سکتا جب تک کہ باپ کی طرف سے اُسے یہ توفیق نہ دی جائے»(یوحنا ۶: ۶۵)۔ہم مسیح کے پیغام کے وسیلے سے لوگوں تک اس لئے نہیں پہنچتے کہ ہم بہت ہی اعلیٰ قِسم کے مقرّر یا لوگوں کو قائِل کرنے والے ہیں۔ہم اس لئے لوگوں تک پہنچتے ہیں کیونکہ باپ نے پہلے ہی سے اُن کے دِلوں میں گہرا کام کیا ہے۔یہ اس لئے ہے کیونکہ روح القدس نے اُنہیں نجات دہندہ کی طرف کھینچا ہے۔دُعا روح القدس کو موقع دیتی ہے کہ وہ اُن روحانی دیواروں کو ڈھا دیا دے جو اِس کھوئی ہوئی اور نااُمیدی میں مرنے والی دُنیا کے دِلوں پر تعمیر کی گئی ہیں۔

خدا کا طریقہ تبدیل نہیں ہوتا۔وہ آج بھی ایسے لوگوں کو ڈھونڈتا ہے جو منکسرالمزاج ، دُعا گواورمقدّس ہوں۔جب اُسے کوئی ایسا شخص مِل جاتا ہے تو دیکھئے گا کہ خدا اپنے تمام تر وسائل اُس کیلئے مہیّا کر دیتا ہے۔یوں روحانی اندھے دیکھنا شِروع کر دیں گے اور شکستہ دِل لوگوں کی مرہم پٹی ہو گی۔