Hide Button

سیمی ٹِپٹ منشٹریز مندرجہ ذیل زبانوں میں مواد مہیا کرتی ہے:۔

English  |  中文  |  فارسی(Farsi)  |  हिन्दी(Hindi)

Português  |  ਪੰਜਾਬੀ(Punjabi)  |  Român

Русский  |  Español  |  தமிழ்(Tamil)  |  اردو(Urdu)

devotions
بیداری اور فتح

۔«کیا تُو ہم کو پھر زِندہ نہ کریگا ، تاکہ تیرے لوگ تُجھ میں شادمان ہوں»(زبور ۸۵: ۶)۔

کئی سال پیشتر میں نے ایک پاسبان کو یہ کہتے سُنا کہ میں اپنی کلیسیاءکے لوگوں کو اکثر سڑک پر ملتا ہوں اور اُن کے چہرے تو پُر رُونق ہوتے ہیں مگراندر سے نہایت شکست خوردہ ہوتے ہیں۔ وہ حسبِ معمول اُن سے پوچھتا تھا«کیا حال ہے جی؟» اکثر اُن کا جواب ہوتا«جیسے بھی حالات ہیں بس ٹھیک ہی ہوں»۔وہ پاسبان پھر اُن سے فوراً پوچھتا«آپ اِن حالات کے بوجھ تلے دَبے کیا کر رہے ہیں؟کیا آپ نہیں جانتے کہ آپ مسیح کیساتھ جِلائے گئے ہیں تاکہ آسمانی مقاموں میں رہیں؟»۔

اُس کا یہ مشکوک سا سوال درست نشانے پر تھا۔مسیحی زندگی پھولوں کی سیج نہیں ہے۔یہ دُکھ نہ اُٹھانے، زخم نہ لگنے اور گھائل نہ ہونے والی زندگی نہیں ہے۔بلکہ اُن میں مسیحی زندگی آپ کو اس لائق بناتی ہے کہ حالات کیسے ہی کیوں نہ ہوں آپ اُن حالات میں مایوسی کی کھائی میں نہ اُتر جائیں بلکہ اُن میںزندگی گزار سکیں۔فاتح مسیحی ہونے کی حیثیت سے آپ کو حالات تلے دَب کر زندگی گزارنے کی ضرورت نہیں ہے۔آپ ایسے حالات میں رہ کر بھی اس لائق ہوسکتے ہیں کہ اُن میں دلیری سے سر اُٹھا کر چل سکیں۔

میں اکثر ایسے لوگوں سے ملتا ہوں جو واقعی خداوند کو پیار کرتے ہیں۔وہ خدا کے حقیقی فرزند ہیں۔اس کے باوجود وہ شکست خوردہ ہیں۔مسیحی زندگی میںخدا نے اُنہیں جو خوشی دی تھی وہ اُن سے چِھن چُکی ہے۔اُن کی زندگی میں اشد بیداری کی ضرورت ہے۔زبور نویس نے لکھا «کیا تُو ہم کو پھر زِندہ نہ کریگا ، تاکہ تیرے لوگ تُجھ میں شادمان ہوں»؟۔

مسیحی زندگی نااُمیدی کی زندگی ہر گِزنہیں ہے۔خدا اپنے لوگوں کو بیدار کرنے کیلئے تیار کھڑا ہے۔وہ ہمیں فتح دینے کیلئے تیار ہے۔بیداری اور فتح دونوںساتھ ساتھ ہیں۔بیداری یہ ہے کہ خدا اپنے آپ کو اپنے لوگوں پر ظاہر کرتا ہے۔جب خدا اپنے لوگوں سے ملاقات کیلئے اُتر آتا ہے تو پھر اس کا نتیجہ ایسی خوشی ہے جو بیان سے باہر ہے۔یہ ایسا وقت ہوتا ہے جس میں اُس کے لوگ شادمان ہو نگے کیونکہ خدا نے اُنہیں فتح بخشی ہے۔ہم میں سے بُہتوں نے اپنی اُمّید کھو دی لیکن ہمیں ایسا نہیں کرنا۔خدا ابھی بھی اپنے تخت پر ہے۔جیسا کہ وہ اس لائق ہے کہ اپنے لوگوں کو بیدار کرے ویسے ہی وہ اس لائق بھی ہے کہ آپ کے دِل کو بھی تازگی بخشے۔

ڈل فحسَنفیلڈ جے آر، کو 1970ءکی دہائی میں امریکہ میں بیداری کیلئے بہت بوجھ تھا۔اُس نے کوشش کی کہ سارے ملک میں اُس کی وجہ سے بیداری کا پیغام پہنچے۔اگرچہ کئی سال پہلے مسٹر ڈَل انتقال کر گیا تو بھی جس خدمت کا اُس نے آغاز کیا تھا وہ آج بھی جاری ہے۔اس خدمت کا نام «،لائف ایکشن منسٹریز»ہے اور شاید امریکہ میںیہ سب سے بڑی تنظیم ہے جو بیداری کے اعتبار سے معروف ہے۔ایک مرتبہ مسٹر فحسَنفیلڈ نے کہا«جب تک خدا اپنے تخت پر ہے بیداری ممکن ہے جیسا کہ کل صبح سورج طلوع ہوگا»۔

یہ سچ ہے کہ بیداری ممکن ہے اسی لئے یہ آپ کی زندگی میں بھی ممکن ہے۔آپ کو حالات کے بوجھ تلے دبے رہنے کی ضرورت نہیں۔ حالات خواہ کیسے ہی کیوں نہ ہوں آپ ان حالات میں بھی فاتحانہ زندگی بسر کر سکتے ہیں کیونکہ خدا ابھی بھی اپنے تخت پر ہے۔ہماری فتح کا منبع وہی ہے۔وہی ہے جو مُردہ دِلوں کو جِلا بخشتا ہے۔آج اپنے دِل میں خدا کو پانے کی ٹھان لیں۔اپنا چہرہ آسمان کی طرح کریں توحالات خواہ کیسے ہی کیوں نہ ہو وہ آپ کو بیدار کریگا اور فتح بخشے گا۔