Hide Button

سیمی ٹِپٹ منشٹریز مندرجہ ذیل زبانوں میں مواد مہیا کرتی ہے:۔

English  |  中文  |  فارسی(Farsi)  |  हिन्दी(Hindi)

Português  |  ਪੰਜਾਬੀ(Punjabi)  |  Român

Русский  |  Español  |  தமிழ்(Tamil)  |  اردو(Urdu)

devotions
خدا کی طرف سے حیران کر دینے والی بات

اگر میں اپنی گواہی کا خاکہ بنا سکوں تویہ خدا کی طرف سے حیرانگی کا سبب ہو گا۔سینتیس سال پہلے میرے دِل میں کوئی رُوحانی دلچسپی نہیں تھی۔میںلوزیانہ ہائی اسکول کے تیس طلباءمیں وہ واحد لڑکا تھا جِس کا انتخاب ہوا کہ نیویارک شہر جا کر اپنی تعلیم مکمل کروں۔وہاں میں فنِ تقریر میں شریک ہوا اور مجھے شمالی امریکہ کے نوجوانوں میں بہترین مقرّرکے طور پر ایوارڈ دیا گیا۔اگلے سال میںسارے امریکہ اور کینیڈا میں اس بات پر تقاریر کرنے کیلئے چلا گیا کہ دُنیا میں امن کی ضرورت ہے۔لیکن میرے لئے ایک بہت بڑا مسئلہ تھا اور وہ یہ کہ میرے اپنے دِل میں اطمینان نہیں تھا۔میں اُس خلا کو شراب نوشی، حرامکاری اور اختیار کی ہوس کے ذریعے پورا کرنے کی کوشش کرتا رہا۔لیکن اس کامثبت نتیجہ کُچھ بھی نہیں تھا۔

یہ وہ وقت تھا کہ جب خدا نے مجھے حیران کر دیا۔اُس شام میری دوست کے والدین نے ہمیں چرچ جانے کا حوصلہ دیا۔اگرچہ میں خدا کا طالب بھی نہیں تھا مگر وہ ضرورمیرا طالب تھا ۔جب میں نے سُنا کی پیغام رساں شخص بات کر رہا ہے کہ مجھے یسوع مسیح کو اپنے نجات دہندہ کے طور پر قبول کرنے کی ضرورت ہے تو میرا دِل چِھد گیا۔میں نے اُس کلام کے ردِ عمل کا اظہار یسوع کیلئے اپنے دِل کے کھولنے سے کیا۔وہ میرے دِل میں آ گیا اور مجھے مکمل طور پر بدل ڈالا۔میرے دوستوں میں سے کُچھ نے کہا«ٹپٹ! میں تجھے دو ہفتے دیتا ہوں اور میں یقین سے کہتا ہوں کہ تُم اپنی اس پرانی زندگی میں واپس آ جاﺅ گے»۔اب تیس سال ہو گئے ہیں اور مجھے یہی کہنا ہے کہ میں اس وقت جتنا یسوع کو پیار کرتا ہوں اِتنا شاید میں کبھی بھی نہیں کرتا تھا۔

خدا نے نہ صرف مجھے حیران کیا بلکہ اُس نے مجھے سنبھالا بھی ہے۔گُزرے سینتیس سالوں کے بارے میں کبھی خواب بھی نہیں دیکھا تھا کہ خدا مجھے اسٹیڈیم ،گراﺅنڈ اور ہر آباد بَرِ اعظم میں استعمال کریگا۔اُس نے مجھے اجازت دی کہ میں مرنے والی دُنیا کیلئے زندگی کی اُمید لے کر جاﺅں۔میں انقلابی حالات سے بھی دوچار ہوا۔میں تین مرتبہ گرِفتار ہوا اور محاذِ جنگ سے بھی ہو گُزرا تاکہ خدا کی محبت کا پیغام سُنا سکوں۔

اُن دِنوں میں خدا مجھے ایک ایسے ملک میں اپنی محبت کی خوشخبری لیجانے کیلئے تیار کر رہا تھا جہاں لوگوں کو اُس کی ضرورت تھی کیونکہ وہ اُس کے بغیر نااُمیدی میں مر رہے تھے۔اُس نے مجھے خوشخبری کے وسیلہ سے ہائی اسکول کے طالب علم کے طور پر حیران کیا۔اُس وقت سے لے کر

آج تک میں پہلے کی طرح نہ رہا۔مسیحی زندگی میں مجھے بہت کُچھ مِلا۔اس میں حیرانگی کے بعد حیرانگی کا سامنا ہوتا رہا۔کیا آپ کبھی خدا کی طرف سے حیران ہوئے؟خدا نے ایک دفعہ زبور نویس سے کہا«خاموش ہو جاﺅ اور جانو کہ میں خدا ہوں۔میں قوموں میں سربلند کیا جاﺅںگا»۔آپ خاموش مقامات میں ٹھہریں اور خدا کی آواز سُنیں۔ممکن ہے کہ آپ حیران ہوں۔